Press Release

سیلز ٹیکس ری فنڈ اوردیگر ڈیوٹی ڈرا بیک اور ربیٹ کے معاملات منسٹری آف کامر س یاTDAPنہیں بلکہ منسٹری آف فنا نس اور FBRدیکھتا ہے۔ ایف پی سی سی آئی

ایف پی سی سی آئی ہیڈ آفس کرا چی(۱ اپریل ۲۰۱۶) فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامر س اینڈ انڈسٹری کے صدر عبدالرؤ ف عالم ،سینئر نا ئب صدر خا لد تواب اور نا ئب صدوررمیاں رحمان عزیز،فیصل جمال دشتی،ذولفقار علی شیخ، ظفر بختاوری،ارشد فاروق، سیدمحمد عاصم، حنیف گوہر،جمعہ خان،ساجدہ ذولفقار نے بزنس کمیو نٹی کے ری فنڈ ز کے اجر ا سے متعلق TDAPاور ایف پی سی سی آئی کی طر ف سے غیر سنجید گی کے بے بنیا د الزام پر مبنی اخبا رات میں شا ئع ہونے والی خبر کی سخت مذمت کرتے ہو ئے کہا کہ اس خبر کے پس منظر موجود عنا صر کو اس بات کا علم ہو نا چا ئیے کہ سیلز ٹیکس ری فنڈ اوردیگر ڈیوٹی ڈرا بیک اور ربیٹ کے معاملات منسٹری آف کامر س یاTDAPنہیں بلکہ منسٹری آف فنا نس اور FBRدیکھتا ہے۔
ایف پی سی سی آئی کے عہدیداران نے بتایا کہ ایس ایم منیر کی عزت وقار اور ایماندا ری اور کا روبا ری سا کھ سے پبلک اور پر ا ئیویٹ سیکٹر کے لوگ خو ب آشنا ہیں۔ جو کئی سال سے قوم کی خدمت کر رہے ہیں خصوصا بزنس کمیونٹی کے مسا ئل کیلئے حل کیلئے کو شا ں ہیں،انہوں نے کہا کہ بزنس کمیونٹی کے ری فنڈ کا معاملہ انہوں نے منسٹری آف فنا نس اور FBRکے متعلقہ حکام کے سا تھ ہر سطح پر اٹھا یا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایس ایم منیر خو د ایک بزنس مین ہیں اور وہ کسی بھی کا ربا ری ادارے میں ورکنگ کیپٹل کی بشمول اہمیت کو خو ب جا نتے ہیں جو کہ حکومت کے پاس پھنسا ہو ا ہے۔
اخبارات میں چھپنے والی مذکو رہ خبر کی مذمت کر تے ہوئے ایف پی سی سی آئی کے عہدیداروں نے کہاکہ عالمی سطح پر کسا دبا زاری کی وجہ سے دنیا کے تما م بڑے ایکسپورٹرز ممالک کی ایکسپورٹ میں کمی آئی ہے اور پو ری دنیا کسا د با زا ری کی زد میں ہے ۔انہوں نے کہا کہ کساد بازا ری اور حکومت کے پاس بزنس کمیونٹی کے بڑی مالیت کے حکومت کے پا س پھنسے ہو ئے ری فنڈز کے باو جو د بز نس کمیونٹی ایس ایم منیر کی قیادت میں متحد ہے ۔جنھوں نے ان حالات میں بھی ملک کی خا طر اپنی ایکسپورٹ میں اضافہ کرنے پر حوصلہ افزائی کی جسکی بدولت ملکی معیشت با و جو د عالمی کساد با زاری کے اتنی متا ثر نہیں ہو ئی۔ انہوں نے کہا کہ اگر ملکی ایکسپورٹ میں دیگر ممالک کے تنا سب سے ایکسپورٹ میں کمی آتی تو پاکستان کی معیشت بدترین حالات کا شکا ر ہو جا تی۔
عبدالرؤ ف عالم صدر ایف پی سی سی آئی نے تبا یا کہ حکومت کے پاس بزنس کمیونٹی کے پھنسے ہوئے ری فنڈ ز کے جلد اجرا ء کیلئے انہوں نے
خو د وزیر اعظم نوازشریف اور وزیر خزانہ اسحا ق ڈار سے انفرادی سطح پر بات کی اور انہوں نے یقین دلایا کہ ری فنڈز جلد جا ری کر دےئے جائیں گے۔جہاں تک ایف پی سی سی آئی کی پر فا رمنس کا تعلق ہے تو انہوں نے بتایاکہ ایف پی سی سی آئی کی کا ر کر د گی کو پورے ملک میں پبلک اور پر ا ئیویٹ سیکٹرز اورعالمی سطح پر سراہا گیا ہے اور ایف پی سی سی آئی مستقل بزنس کمیونٹی کے مسائل کے بشمول ری فنڈ کے مسئلہ کے حل کیلئے پو ری لگن سے مصروف عمل ہے۔

مہر عالم خان
قائم مقام سیکریٹری جنرل( ایف پی سی سی آئی )