Press Release

ایف پی سی سی آئی کے سینئر نائب صدر خالد تواب نے روس کے ساتھ گیس، ریلو ے،بجلی کے شعبے کی تعمیرِنو میں دوطر فہ تعلقات کی جانب زوردیا ۔انہوں نے

ایف پی سی سی آئی کے سینئر نائب صدر خالد تواب نے روس کے ساتھ گیس، ریلو ے،بجلی کے شعبے کی تعمیرِنو میں دوطر فہ تعلقات کی جانب زوردیا ۔انہوں نےایف پی سی سی آئی ہیڈ آفس کرا چی(۳ مارچ ۲۰۱۶) ایف پی سی سی آئی کے سینئر نائب صدر خالد تواب نے روس کے ساتھ گیس، ریلو ے،بجلی کے شعبے کی تعمیرِنو میں دوطر فہ تعلقات کی جانب زوردیا ۔انہوں نے فیڈریشن ہاؤ س میں رو سی قونصل جنرل اولیگ این ایوڈیو کی سربر اہی میں وفد سے گفتگو کر تے ہوئے کہاکہ روس کے ساتھ بینکنگ کے ذرائع اور سنگل کنٹری ایگزیبیشن کے تبادلے کو فروغ دیا جائے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ روس پاکستان میں اسٹیل انڈسٹری اور مشینری، انجینئرنگ اور آٹو مو با ئل کے شعبوں میں جدید ٹیکنالوجی کو متعارف کرانے میں تعاون کرے جس سے باہمی ہم آہنگی کے تحت دونوں ممالک کے بیج میں معا شی خوشحالی آ ئیگی۔روسی
قو نصل جنرل اولیگ این ایوڈیو نے تبادلہ خیال کر تے ہوئے کہاکہ پاکستان اور روس دو طر فہ تعلقات کو مزید فر و غ دینے کے لئے دنوں ممالک کے درمیان تجارتی وفود کے تبا دلے کی طر ف تو جہ دیں جس کے تحت دو نو ں ممالک میں نئے مواقع پیدا ہونگے۔خالدتواب نے قو نصل جنرل کو ٹیکنا لوجی ٹرانسفر کی جانب تو جہ دلائی جس سے پاکستان میں اقتصادی اور معا شی استحکام پیدا ہو گا اور رو س بھی اس کا شراکت دار ہو گا۔اجلاس میں ایف پی سی سی آئی کے نائب صدور ارشد فاروق اور فیصل جمال دستی شامل تھے اور اُنکے ہمراہ زبیر طفیل، کیپٹن کمال محمودی، وحید شاہ، سلیم شیخ، وسیم وہرہ ، رؤف تابانی اور خالد امین بھی تھے۔

خالد تواب نے ایک اور اجلاس روس میں تعینات پاکستانی سفیر قا ضی ایم خلیل کے سا تھ کیا جس میں خالد تواب نے پاکستانی سفیر کی تو جہ روس کے ساتھ گھٹتی ہو ئی پاکستانی بر آمداد کی طر ف دلائی اُنہوں نے کہا کہ 350سے400ملین امریکی ڈالر کی روس کے ساتھ پاکستانی تجا ر ت خاطر خواہ نہیں ہے اورنہ ہی دو نو ں ممالک کے درمیان حقیقی صلاحیت کی عکا سی کر رہی ہے ۔۔قاضی ایم خلیل نے کہا کہ روس پاکستانی مصنوعات کیلئے ایک بڑی مارکیٹ ہے لیکن اس کے باوجود پاکستانی تجارت کا صرف 0.6فیصد حصہ روس کے ساتھ ہے جبکہ روس175بلین امریکی ڈالر کی تجا ر ت کے ساتھ دنیا کی دس بڑی معیشت میں سے ایک ہے ۔ قا ضی ایم خلیل نے مزیدکہا کہ پاکستانی مصنوعات خاص طور پر پھل، سبزیاں، مچھلی، سمندری غذا، گو شت اور مرغی کی روس میں بر آمدادکے طور پہ خاص اہمیت رکھتی ہیں اورروس میں پاکستانی سفارتخانہ دونوں ممالک کے درمیان تجارتی معاہدوں کی طرف پیش قدمی کرے گا۔

مہر عالم خان
قائم مقام سیکریٹری جنرل( ایف پی سی سی آئی )