Press Release

ایف پی سی سی آئی کے سینئر نائب صدر خالد تواب نے بیرونِ ملک نئے تعنات کمرشل کونسلرزکے 40رکنی وفد اور 4کونسل جنرلز کے ایف پی سی سی آئی کے دورے ک

ایف پی سی سی آئی کے سینئر نائب صدر خالد تواب نے بیرونِ ملک نئے تعنات کمرشل کونسلرزکے 40رکنی وفد اور 4کونسل جنرلز کے ایف پی سی سی آئی کے دورے کایف پی سی سی آئی ہیڈ آفس کرا چی(۲۵ فروری ۲۰۱۶) ایف پی سی سی آئی کے سینئر نائب صدر خالد تواب نے بیرونِ ملک نئے تعنات کمرشل کونسلرزکے 40رکنی وفد اور 4کونسل جنرلز کے ایف پی سی سی آئی کے دورے کے موقع پرایک اجلاس کے دوران کہاکہ فیڈریشن آف پاکستان چیمبر زآف کامر س اینڈ انڈسٹری ملک کی سپریم تجار تی باڈی ہے جو کہ تا جر بر ا د ری ،ایسوسیشنز اور مختلف شہروں کے چیمبر آف کامر س اینڈانڈسٹری کی اجتمائی رائے،اظہار،تجویز اور مسئل کو نہ صرف متعلقہ اداروں تک پہنچا تی ہے بلکہ نئی سرمایہ کاری کے مواقع بھی تلاش کرتی ہے اور اقتصادی سرگر میوں کے فر وغ کیلئے ہر لمحہ کو شا ں رہتی ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ فیڈریشن نجی شعبے اور حکومت کے درمیان روابط بر قرار رکھنے میں اہم کر دار ادا کر تی ہے۔اجلاس میں ایف پی سی سی آئی کے نا ئب صدر میں زولفقار علی شیخ ور ان کے ہمراہایف پی سی سی آئی کے سابق سینئر نائب صدراور چیرمین فیئر اینڈ ایگزیبیشن اور ڈیلیگیشن عبدلرحیم جانو، ڈاکٹر اِختیار بیگ،وحید شاہ، کیپٹن کمال اے محمودی، سمیع خان شامل تھے۔خالد تواب نے کمرشل کونسلرزکوبتایا کہ وزیرِاعظم نواز شریف کے اِعلانیہ کے مطابق1stجولائی2016کو ایکسپورٹ کے پانچ بڑے شعبے زیرو ریٹٹ ہوجائینگے جس سے ایکسپورٹ کے نئے ادوار کھل جائینگے۔ اُنہوں نے کمرشل کونسلرزکو بتایا کہ وہ ایف پی سی سی آئی کی پاکستان انٹرنیشنل ٹریڈ فیئر (PITF)جو کہ رواں سال میں کراچی ایکسپو سینٹر منعقد ہورہی ہے ، میں تعاون کریں اور ساتھ میں پاکستانی لیبر کیلئے کمرشل کونسلرزاپنے تیعناتی ممالک میں روزگار کے مواقع فراہم کریں۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ ایف پی سی سی آئی کی بزنس کونسلز کے ساتھ کمرشل کونسلرزتعاون کریں۔

خالد تواب نے مزید بتایا کہ FPCCI عالمی سطح پر مختلف علا قائی اور عالمی اداروں مثلاًCACCI کنفیڈریشن آف ایشیا پسیفک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈ سٹر ی ۔ECO چیمبر آف کامرس ۔اسلامک چیمبر آف کامرس ۔ سارک چیمبر آف کامرس ۔D8چیمبر آف کامرس کے ساتھ بھی وابستہ ہے ۔اور ان کے ساتھ ملکر علا قائی اور عالمی سطح پر تجا رت اور سر مایہ کا ری کے فر وغ کے لیے کو شاں ہے اور اس سلسلے میں ان اداروں کے ساتھ ملکر ان غیر محصولا تی رکا وٹو ں کو سامنے لا تا ہے جنکی وجہ سے علا قا ئی تجا رت اور سر مایہ کا ری متا ثر ہو تی ہے تا کہ ان کو دور کیا جا سکے ۔اس وقت FPCCI کے پا س دو بڑ ے علا قا ئی چیمبر ز ECO-CCIاور D-8 CCI کی سر برا ہی بھی مو جو د ہے اور FPCCI کا صدر بیک وقت ECO-CCI کا صدر اور D-8 CCI کا چیئر مین بھی ہے ۔اسکے علا وہ FPCCI دو سر ے ممالک کے ساتھ بہتر معا شی اور تجا رتی تعلقا ت استوار رکھنے کے لیے ان ملکو ں میں اپنے Counterparts کے ساتھ قر یبی روابط رکھتا ہے ۔ اُنہوں نے کمرشل کونسلرزکو جوائنٹ بزنس کونسل کی سرگرمیوں کو بڑھانے اور باقاعدہ میٹنگز کے سلسلے کی شروعات پہ بھی ذور دیا۔ خالد تواب نیپاکستان اِیمبیسیوں اور ایف پی سی سی آئی کے درمیان مزید روابط مضبو ط کرنے کیلئے مزید ملاقاتوں کو تر جیح دی۔ کمرشل کونسلرز کے وفدنے فیڈریشن کے خیالات سے اتفا ق کیا اور فیڈریشن کی کا و شو ں کو سہراتے ہو ئے اس بات کی یقین دہانی کر ا ئی کے مستقبل میں تعلقات مزید مستحکم ہو نگے اور نئے اقدامات کے مواقع فراہم کےئے جائیں گے۔

ڈاکٹر مرزا اِختیار بیگ نے کمرشل کونسلرز کے وفدکو کہا کہ وہ پاکستان کی یورپی یونین میں تجارتی مواقع پیدا کریں اورپاکستان کو GSP Plus Statusکے ذریعے ملنے والے مواقع کی آگاہی تاجروں میں کرایں، جس سے ملک کی ایکسپورٹ میں بہتری آئی گی۔ اُنہوں نے CPECسے پاکستان میں تجارت کے نئے ادوار کی طرف بھی توجع دلائی۔

مہر عالم خان
قائم مقام سیکریٹری جنرل( ایف پی سی سی آئی )