Press Release

شیخ خالد تواب نے وزیر خزانہ اسحق ڈار کو کمپنیز آرڈیننس 2016پر مبا رکبا د پیش کی ۔

کرا چی ( 24-11-2016) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرزآف کامرس اینڈ انڈ سٹر ی کے سنیئر نائب صد رشیخ خالد تواب نے کمپنیز آرڈیننس 2016کے نفا ذ العمل ہو نے پر وزیر خزانہ اسحق ڈار کو مبا رکبا د پیش کر تے ہو ئے کہا کہ یہ آرڈیننس بہتر ین بین الا قوامی کا رپوریٹ طر ز پر تیار کیا گیا ہے ۔ جو نہ صر ف کا رپو ریٹ سیکٹر کی حوصلہ آفزا ئی کریگا بلکہ ان کو سہو لیا ت بھی فرا ہم کرے گا اور یہ آرڈیننس کمپنیز ممبرا ن کی فیصلہ سا زی کے عمل میں زیا د ہ سے زیادہ شر کت کو بھی مو ثر بنا سکے گا ۔ خالد تواب نے وزیر خزانہ کے اس اقدام کو سراہتے ہو ئے کہاکہ اس آرڈ یننس کا نفا ذ بھی وزیر خزانہ کے سر ہی جا تا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کمپنیز آرڈیننس 1984کی وضا حت کر تے ہو ئے کہاکہ وہ اپنی طبعی معیاد پو ری کر چکا تھا اور اب فر سو دہ ہو چکا تھا جس کے پیش نظر اس پرانے آرڈ یننس کو نئے آرڈیننس کے ذریعے تبدیل کر نا ضروری تھا ۔ نیاآرڈ یننس نئے طر یقہ کا ر اوروقت کے نئے تقا ضو ں سے ہم آہنگ ہے اوراس کی تیا ری میں انفارمیشن ٹیکنا لو جی کے زیادہ سے زیادہ استعمال کو مد نظر رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے نئے آرڈیننس کی چند نما یا ں حصوصیا ت کوسراہتے ہو ئے کہاکہ ملک کی تا ریخ میں پہلی دفعہ اس آرڈیننس میں SMEsسیکٹر شریعہ سر ٹیفکیشن اور رئیل اسٹیٹ کی ضروریات اور سہو لتو ں کو بھی مد نظر رکھا گیا ہے تا کہ سر مایہ کا روں کو زیا دہ سے زیا دہ تحفظ فرا ہم کیا جا سکیں ۔ خالد اتواب نے اس نئے قانو ن کے نفاذ کا حو الہ دیتے ہو ئے کہاکہ یہ بہتر ہو تا کہ اس آرڈ یننس کو پا رلیمنٹ میں بحث کے بعد ایکٹ کی صورت میں تشکیل دیا جا تا بجا ئے اس کے کہ اسے آرڈیننس کے ذریعے نفا ذ کیا جا تا جو کے کا رپو ریٹ سیکٹر اور پاکستان کی معیشت کے لیے بہت اہمیت کے حامل تھا ۔

مہر عالم خان
قائم مقام سیکر یٹر ی جنرل ایف پی سی سی آئی