Press Release

ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کے با ر ے میں قیصر شیخ اصل حقا ئق سے لا علم ہیں۔خالد تواب سینئر نائب صدر ایف پی سی سی آئی۔

ایف پی سی سی آئی ہیڈ آفس کرا چی (10 فروری 2016)فیڈریشن آف پاکستان چیمبر ز آف کامر س اینڈ انڈسٹری کے سینئر نا ئب صدر خالد تواب نے قو می اسمبلی کی قا ئمہ کمیٹی بر ا ئے فنا نس کے چےئرمین قیصر احمد شیخ کے ایک اخباری بیان کے بارے میں حیرت کا اظہار کر تے ہو ئے کہا کہ قیصر احمدشیخ کو اصل حقیقت کا علم نہیں ہے کیو نکہ ان کی کمیٹی بیس نو مبر کے بعد تشکیل میں آئی بلکہ اصل حقیقت یہ ہے کہ ٹیکس نیٹ میں وسعت کیلئے جس ٹیکس اسکیم کے لئے گزشتہ آٹھ ماہ سے کو ششیں کی جا رہی تھیں لیکن آخر میں آکر اس کے اہم جزئیات کو نکال کر اس اسکیم کااعلان کر دیا گیا اور اس کی افادیت کو ختم کر دیا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر چہ ایف پی سی سی آئی کے تما م ممبران ٹیکس نیٹ میں مو جو د ہیں اور ایف پی سی سی آئی ہمیشہ سے ٹیکس نیٹ میں وسعت کا خواہاں رہا ہے جس کی وجہ سے نان فائلرز کو فائلر بنانے کیلئے ایف پی سی سی آئی مسلسل آٹھ ماہ تک وزارت خزانہ اور ایف بی آر کے احکام سے بات چیت کر تا رہا۔اور اس سلسلے میں زبیر طفیل صاحب نے فیڈریشن آف پاکستان چیمبر ز آ ف کامرس اینڈ انڈسٹری کی
نما ئند گی کرتے ہوئے بارہااسلام آباد کا دورہ کیا ۔

خالد تواب نے مزید بتایا کہ قیصر احمد شیخ اور ان کی کمیٹی کے ممبران کو ایف پی سی سی آئی میں ایک اجلاس کے دوران واضح کیا تھا کہ کن وجوہات کی بنا پر یہ اسکیم ملک کی معیشت کیلئے فا ئدمند نہیں رہی ۔انہوں نے کہا کہ دراصل چھوٹے اور درمیانے تاجر و ں کا یہ دیرینہ مطالبہ تھا کہ انہیں ایف بی آر کے پیچیدہ ٹیکس نظام سے دور رکھا جائے اور ایک دکان اور ایک مکان کو ڈیکلر کرنے کی اجازت دی جائے جبکہ اس مطالبے کو بالکل نظر انداز کردیا گیا ہما ر ے خیال میں اس ٹیکس ایمنسٹی اسکیم پر دوبارہ نظر ثا نی کی جائے اور چھوٹے تاجر وں کو مزید سہولتیں دی جائیں خا ص طورپر بزنس کیپیٹل کے علاوہ دیگر اثا ثوں کے بھی ڈیکلر کرنے کی اجازت دی جائے۔

مہر عالم خان
قائم مقام سیکریٹری جنرل( ایف پی سی سی آئی )