Press Release

نیوی وار کالج کے ایک 60رکنی وفد نے ریرایڈمیرل محمد امجد خان نیا زی کے زیرِقیادت ایف پی سی سی آئی کے ہیڈ آفس کا ایک مطالعاتی دورۂ کیا۔

ایف پی سی سی آئی ہیڈ آفس کرا چی (۲۹ جنوری ۲۰۱۶) نیوی وار کالج کے ایک 60رکنی وفد نے ریرایڈمیرل محمد امجد خان نیا زی کے زیرِقیادت ایف پی سی سی آئی کے ہیڈ آفس کا ایک مطالعاتی دورۂ کیا۔ اِس مطالعاتی دورہ کے موقع پر سوال جواب کے مرحلے میں وفد کے ارکان نے مختلف امورزیرِبحث لائے جن میں پڑوسی اور دیگر ممالک کے ساتھ تجارتی تعلقات اور اقتصادی روابط کے فروغ اور علاقائی تنظیموں سارک اور ECOچیمبر آف کامرس میں ایف پی سی سی آئی کے کردار ، بین الاقوامی سطح پر تیل کی قیمتوں میں کمی اور اِسکے ممکنہ ثمرات عوام الناس تک پہنچانے اور معیشت کی بہتری کے لئے خاطرخواہ فائدہ اُٹھانے کی حکمتِ عملی کے علاوہ حالیہ ایران اور سعودیہ تنازع کی صورت میں معیشت پر منفی اثرات سے بچاؤ کی تدابیر، پاکستان اور انڈیا کے مابین تجارتی تعلقات بھی زیرِ بحث آئے۔

وفد کے ارکان نے قومی سطح پر بھی معیشت میں ایف پی سی سی آئی کی اہمیت کے بارے میں سوالات کئے جن میں قومی بجٹ، اقتصادی پالیسی، GDPکی بہتری ،ملکی برامداد کوبڑھانے اور نئی منڈیوں کی تلاش وغیرہ شامل ہے۔ اِس مطالعاتی دورۂ میں وفد کے ارکان نے پاک چائنا اِکنامک کوریڈور پر بھی تفصیل سے گفتگو کی۔ایف پی سی سی آئی کے پینل جوکہ نا ئب صدر ارشد فاروق، ایکٹنگ سیکریٹری جنرل مہر عالم خان، ڈائیریکٹر جنرل ڈاکٹر ایوب مہر پر مشتمل تھا، نے تفصیلی جوابات دئے ۔ نائب صدر ایف پی سی سی آئی ارشد فاروق نے بتایا کہ CPECنہ صرف پاکستان کی معیشت مزید مستحکم ہوگی بلکہ ایران افغانستان اور دیگر وسطی ایشیائی ریاستوں کے لئے بھی گیم چنجر ثابت ہوگی۔



مہر عالم خان
قائم مقام سیکریٹری جنرل( ایف پی سی سی آئی)