Press Release

اس بات میں دورائے نہیں ہو سکتی کہ جب سندھ کے نئے وزیر اعلی جنا ب مراد علی شاہ صاحب نے منصب سنبھالا

اس بات میں دورائے نہیں ہو سکتی کہ جب سندھ کے نئے وزیر اعلی جنا ب مراد علی شاہ صاحب نے منصب سنبھالاکرا چی ( 25-08-2016) اس بات میں دورائے نہیں ہو سکتی کہ جب سندھ کے نئے وزیر اعلی جنا ب مراد علی شاہ صاحب نے منصب سنبھالا انہوں نے سب سے اولین تر جیح شہر سے گندگی صاف کرنے کو دی ہے جس کہ وجہ سے شہر کی خو بصورتی ماند پڑ رہی تھی اور گندگی کی وجہ سے بیماریاں پھیل رہی تھیں ہمیں خو شی ہے کہ شہر میں ہنگا می بنیادوں پرصفا ئی ستھرائی کا کام جا ری ہے۔ یہ بات فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈ سٹر ی کے نائب صدر ذولفقارعلی شیخ نے فیڈریشن ہا ؤس میں ڈاکٹرز کے ایک سیمنار سے خطا ب کر تے ہو ئے کہی ۔ اس سیمنار میں محمد علی ملکا نی ، وزیر برا ئے لائیواسٹاک اینڈ فشر یزسند ھ، فیڈریشن کے نا ئب صدور حنیف گو ہر، فیصل جمال دشتی، ارشد فاروق کے علاوہ ایف پی سی سی آئی سند ھ ریجنل قا ئمہ کمیٹی برا ئے لیبارٹیز سروسزکے چیئرمین ڈاکٹر فر حان عیسیٰ عبداللہ ، شکیل احمد ڈھینگرا، ڈاکٹر ثنا انوار،پروفیسر ڈاکٹر شاہا نہ عروج کا ظمی اور بڑ ی تعداد میں ڈاکٹر نے شر کت کی۔ذولفقار علی شیخ نے کہاکہ یہ ایک قسم کا کیڑا ہوتا ہے جو کھال کے ذریعے کا ٹتا ہے اور جیسے ہی اسکا زہر خون میں ملتا ہے انسان کو بخار چڑھنا شروع ہو جا تا ہے ۔یہ دیکھنے میں چھوٹے کیڑے ہوتے ہیں جھاڑیوں ،پودوں ،جانوروں کو چھونے سے لوگو ں کو شکار کر تے ہیں ۔اس کو Tic Biteکہتے ہیں کیونکہ اس کے کاٹنے کا عمل بڑا تیزہوتا ہے۔ ذولفقا ر علی شیخ نے کہاکہ کر ا چی میں اب تک دو کیسیز رپورٹ ہو ئے ہیں ہما رے لئے اس کی اہمیت اس لئے بھی بڑھ گئی ہے کیو نکہ عیدالضحیٰ قریب آرہی ہے اور پورے شہر میں ہزاروں جانور جن میں گائے،بھینسیں، بکریاں شامل ہیں جگہ جگہ ان کی منڈیاں لگی ہو ئی ہیں پانی کی شہر میں ویسے بھی قلت ہے اس لئے اس کیلئے ضروری ہے کہ سخت احتیا طی تدابیر اختیار کی جائیں تاکہ یہ وائرس نہ پھیل سکے۔ اس موقع پر حنیف گو ہر نے کہاکہ حکومت سندھ کو چا ئیے کہ جہاں جہاں جانورں کی منڈیاں لگی ہیں وہاں فو ری طو ر پر اسِپرے کئے جائے اور جانوروں کو نہلانے کا بندوبست ہونا چا ئیے اور خریدتے وقت جانوروں کو ہاتھ لگانے سے پہلے ہو سکے تو دستا نے پہن کر جا نور کو ہاتھ لگا ئیں ۔تاہم یہ ضروری نہیں ہے کہ ہر جانور میں بیماری کی علامت ہو بحرحال احتیاط لازمی ہے۔ہم محمد علی ملکانی وزیر لائیواسٹاک اور فشرز سے اُمیدرکھتے ہیں کہ وہ کانگو وائرس کے حوالے سے سخت احتیاطی اقدامات اٹھا ئیں گے تا کہ یہ بیماری نہ پھیل سکے ۔وزیر اعلی سندھ نے پہلے ہی کر ا چی شہر سے ہر قسم کا کچرا اٹھانے کے احکامات صادر کر دےئے ہیں لیکن چو نکہ کر ا چی میں جانو ر و ں کی بھر مار ہے اس لئے اس کیلئے خاص ٹیمیں تشکیل دی جائیں تا کہ وہ اِسپرے کریں یہ بیماری نہ پھیل سکے ۔ تقر یب سے خطا ب کر تے ہو ئے محمد علی ملکا نی ، وزیر برا ئے لائیواسٹاک اینڈ فشر یزسند ھ نے کہاکہ کا نگو وائرس کی تصدیق آسان نہیں اس لیے کا نگو وائرس سے بچاؤ کے لیے لو گو ں سے زبر دستی نہیں کر سکتے ۔ انہوں نے کہاکہ کر اچی کی مو یشی منڈی کا دور ہ کر رہا ہو ں تا کہ آگا ہی فر اہم کی جا سکے ۔ بلو چستا ن اور خیبر پختو نخواہ سے آنے والے مو یشیو ں میں کا نگو وائرس کا زیا دہ امکان ہو تا لہذااس سے پچا ؤ کے لیے صو بے اور شہر کو اس وائرس سے پا ک کر نے کی کو شش کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ مو یشی لا نے والی ہر گا ڑی پر اسپر ے کرنا آسان نہیں ہے سہر اب گو تح اور بھینس کا لو نی میں کیمپ قائم کیا گیا ہے ۔ محمد علی ملکا نی نے کہاکہ مو یشیوں کی ویکسین نہیں کر سکتے کیونکہ اس کے بعد ایک ما ہ تک گو شت قابل استعمال نہیں کر سکتے ۔ انہوں نے کہاکہ چھو ٹے جانو روں میں کا نگو وائرس کے خطرا ت بہت زیا دہ ہو تے ہیں ۔ صوبائی وزیر نے کہاکہ وائرس سے بچا ؤ کے لیے جلد ایڈوائز ری بو رڈ کے قیا م کا اعلا ن کیا جا ئے گا ۔