Press Release

ٹر یڈ ڈویلپمنٹ اتھا رٹی TDAPکے دفتر کی کرا چی سے منتقلی کی خبر پر تشویش کااظہار۔ خالد تواب ، قائم مقام صدر ایف پی سی سی آئی

کرا چی ( 16-08-2016) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈ سٹر ی کے قائم مقام صدر شیخ خالد تواب نے ٹر یڈ ڈویلپمنٹ اتھا رٹی کے ہیڈ آفس کے اسلام آبا د منتقلی سے مطالق خبروں پر تشویش کا اظہا ر کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اس خبر کی ایف پی سی سی آئی کی ممبر ٹر یڈ باڈیزنے بھی شدید مذمت کی ہے اور بز نس کمیو نٹی میں بے چینی کی لہر دوڑ گئی ہے انہوں نے کہا کہ ممبر ٹر یڈ باڈیزنے ایف پی سی سی آئی کے اس موقف کی بھر پور حمایت کی ہیں ۔ خالدتواب نے کہا کہ حکام کے ایسے اقدام سے صنعت کاروں اور ایکسپوٹرز کی مشکلا ت میں مزید اضا فہ ہو گا جو کہ پہلے ہی ایکسپورٹ میں کمی سے پر یشان ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ کے پاکستان کی برآمدات میں کئی سالو ں سے کمی واقع ہو رہی ہیں عالمی ما رکیٹ میں مندی کی مختلف وجوہا ت کے با عث کمی کے رجحان دیکھا گیا ہے ۔ اور بین الااقومی ما رکیٹ میں اشیا کی قیمتوں میں کمی واقع ہو رہی ہیں ۔ نیز یہ کہ پاکستانی اشیا ء کی لا گت پیداوار اور لا گت ایکسپورٹ بہت زیا دہ ہے جس کی وجہ سے ہماری اشیا ء بین الاقوامی ما رکیٹ میں دیگر ممالک کی اشیا ء کے مقابلہ میں مشکلا ت پیش آرہی ہیں ۔ انہو ں نے کہا کہ سیلز ٹیکس ریفنڈ میں تا خیر اور وقت پر ادائیگیا ں بھی نہیں کی جاتی۔ قائم مقام صدر نے کہاکہ کرا چی سےTDAPکے ہیڈ آفس کو منتقل کر نے سے ایکسپورٹ میں کمی کا امکا ن ہیں۔ چنانچہ اس پس منظر میں مو جو دہ حالات میں اس قسم کا فیصلہ نہ کیا جا ئے جس کے تحت درآمدات میں مز ید کمی واقع ہو ۔ کرا چی کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہو ئے خالد تواب نے کہا کہ کرا چی ایک اہم بندر گا ہ ہے اور ملک کے سب سے بڑ ے شہر کے طو ر پر یہ تجا رتی اور مالیاتی سر گر میوں کا صدر مقام ہے اور دنیاکے بڑ ے شہر وں میں اس کا شما ر کیا جا تا ہے ۔خالد تواب نے کہا کہ فیڈرل بو رڈ آف ریونیوکی مجمو عی آمدنی میں اس کا حصہ 50فیصد سے بھی زیا دہ ہے اس کے علاوہ کرا چی کی بڑ ی صنعتو ں کا GDPکا 20فیصد ہے اور پاکستان کی ریونیو کا 70فیصد ادا کر تا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ ورلڈ بنک نے کرا چی کو کاروبار دوست شہر قرار دیا ہیں اور گلوبل ہیومن رسیو رسز \"مرسر\" سے کی گئی تحقیق کے نتیجہ میں کرا چی شہرکو دنیا بھر میں سستا تر ین شہر قرار دیا ہے ۔ مزید یہ کہ ملک کے سب سے زیا دہ نما ئش کنندگا ن میں سے اکثر کے دفاتر بھی کرا چی میں واقع ہے اور یہاں ان کی مصنوعات کی نما ئش اور برآمدات کے فروغ کے لیے کرا چی میں ایکسپوسینٹر بھی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ TDAPکے ہیڈ آفس کی کی اسلا م آباد منتقلی سے کا روباری سیکٹراور TDAPکے ساتھ رابطو ں میں کمی واقع ہو گی ۔ قائم مقام صدر نے کہا کہ کراچی مشر قی وسطی اور یو رپی یو نین کے دہانے پر واقع ہیں جس کی وجہ سے مکامی اور غیرملکی سر مایہ کا روں کے لیے منا فع بخش شہر کے طو ر پر تصو رکیا جا تا ہے ۔ فیڈریشن کے قائم مقام صدر خالد تواب نے ایک بار پھر متعلقہ حکام پر زور دیتے ہو ئے کہا کہ کرا چی کے صنعتی اور تجا رتی مفادات کو مد نظر رکھتے ہو ئے TDAP کے ہیڈ آفس کو کرا چی سے منتقل نہ کیا جا ئے ۔