Press Release

ایسو سی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز ( آبا د) نے تعمیراتی شعبہ کے لیے فکس ٹیکس کا نظام رائج کر نے کی آبا د کی در خواست پر نئے بجٹ میں شامل کر نے

(کرا چی 13-06-2016) ایسو سی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز ( آبا د) نے تعمیراتی شعبہ کے لیے فکس ٹیکس کا نظام رائج کر نے کی آبا د کی در خواست پر نئے بجٹ میں شامل کر نے پر وزیر اعظم میاں محمد نواز شر یف ، وزیر خزانہ سینیٹر اسحق ڈار ، وزیر اعظم کے معاون خصوصی برا ئے مواصولات ہارون آختراور حکومت کی فنا نس ٹیم کے تمام اراکین کا شکر یہ کر تے ہو ئے حکومت سے مزید درخواست کی ہے کہ نئے فیکس ٹیکس نظام میں زیر تعمیر منصوبو ں کو بھی شامل کیا جا ئے تاکہ ٹیکس کے تمام معملا ت حل کیئے جا سکے اور حکومت کو بھی موصولاتی ٹارکٹ پو را کر نے میں مدد ملے گی ۔ آبا کے پیٹر ن چیف محسن شیخانی چیئر مین آباد حنیف گو ہر اور سنیئر وائس چیئر مین عارف یو سف جیوا ، وائس چیئر مین رضوا ن ہڈیا اور چیئر مین سدرن ریجن آصف سم سم نے اپنے ایک بیا ن میں کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے بلڈ رز اور ڈیولپر ز کے لیے فیکس ٹیکس کے نظا م کے رائج کر نے کا تعمیراتی شعبہ کا درینہ مطالبہ تسلیم کر کے اس شعبہ کے فر وغ کے لیے راہ ہموار کی ہے جو کے حکومت کی جانب سے قابل تعر یف اقدام ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تعمیرا تی شعبہ کے لیے فیکس ٹیکس کا نظا م بجٹ 2016-17کی منظو ری کے بعد یعنی پہلی جولا ئی 2016سے عمل میں آئیگا ۔مگر اس میں مو جو دہ تعمیرا تی منصو بے شامل نہیں ہو گے جس کی وجہ سے تعمیراتی شعبہ کے موصولات سے متعلق تمام مسائل حل نہیں ہو نگے ۔ اس لیے ہم زیر تعمیر منصوبا جا ت کو بھی فیکس ٹیکس نظا م میں شامل کر نے کا مطا لبہ کر تے ہے کیو ں کے اس اقدام سے موصولا ت ادا کر نے والو ں کے ساتھ ساتھ موصولا ت وصول کر نے والوں کو بھی ٹارکٹ حاصل کر نے میں مدد ملے گی ۔ آبا د کے عہدیداورں نے بلڈرز کی تعمیر شد ہ سوسائٹیز پر عائد گیس کنکشن کی پا بند ی فوری طور پر اُٹھانے کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ تعمیراتی شعبہ کو مزید فروغ دینے کے کے لیے حکومت کو سیمنٹ کی قیمتں مناسب سطح پر لا نے کے لیے سیمنٹ منیو فیکچر ز کو لگا م دینے کی ضرورت ہے ۔ کیونکہ ایران ، بھارت ، متحدہ عرب امارات سعودی عر ب سامد ہمارے پڑوسی ممالک میں سیمنٹ کی قیمتیں پا کستان کے مقابلے میں ادھی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ آبا د نے مسبقاتی کمیشن کو نا جائز منافع خور سمینٹ منیوفیکچرز کے خلا ف بر پور کاروائی کر نے کے لیے خط لکھا ہے ۔ ماضی میں بھی مسابقتی کمیشن نے سیمنٹ کارٹیل کے خلا ف کاروائی کی تھی اس کے باوجو د انہوں نے غلط طرز عمل طر ک نہیں کیا ہے ۔اس لیے آبادٹ سیمنٹ کارٹیل کے خلا ف سید ھی کا روائی کے لیے اور نئے بجٹ میں سیمنٹ پر لگا ئی گئی فیڈریل اکسائز ڈیو ٹی واپس لینے کا حکومت سے مطالبہ کر تی ہے ۔