Press Release

پاکستان نے اقتصادی تعاون کی تنظیم (ای سی او )کے ٹی آئی آر کنونشن پر دستخط اور تصدیق نے کر دی ہے لیکن TIR کنونشن کی کامیابی کا دارومد اقتصادی ت

(کراچی مورخہ 18 مئی 2016 ) پاکستان نے اقتصادی تعاون کی تنظیم (ای سی او )کے ٹی آئی آر کنونشن پر دستخط اور تصدیق نے کر دی ہے لیکن TIR کنونشن کی کامیابی کا دارومد اقتصادی تعاون کی تنظیم (ای سی او ) ویزا اِسٹیکر اِسکیم اور وائٹ کارڈ اسکیم پر منحصر ہے۔ ان خیالات کا اظہار ( ایف پی سی سی آئی )کے سینئرنائب صدر خالد تواب نے ترکی کے قونصل جنر ل مراد مصطفی اونارٹ کے ساتھ ملاقات دوران کیا۔ جنہوں نے کے کمرشل اِیٹیچی کے ہمراہ ایف پی سی سی آئی کا دورہ کیا۔ ملاقات میں فیڈریشن چمبر آف کامرس کے نائب صدور ارشد فاروق ، ذوالفقار شیخ ،پاکستان تر کی بزنس کونسل آف ایف پی سی سی آئی کے چےئرمین عبدارشید آبر ڑو،ایکیٹنگ سیکریٹری جنرل مہر عالم خان ،اور ایف پی سی سی آئی کے ڈائریکٹر جنرل اور ای سی او چیمبر آف کامر س کے اکنامک ایڈاوائزرڈاکٹر ایوب مہر بھی شامل تھے۔

خالد تواب نے کہا کہ سارک کی طرز پراقتصادی تعاون کی تنظیم (ای سی او ) کی بھی ویزہ اِسٹیکر اِسکیم اور وائٹ کارڈ وقت کی ضرورت ہے کہ ای سی او ریجن میں ٹی آئی آر کنونشن پہ کا میابی سے عمل درآمدہو سکے۔ ۔انہوں نے مزید کہا کہ یہ دونو ں تجاویز ای سی او کے متعلقہ حکام کوپیش کی جا چکی ہیں۔ اور پاکستان میں موجود ای سی او چیمبر آف کا مر س کے سیکریٹریٹ اس معا ملے کودیکھ رہا ہے اور اس پرای سی او چیمبر آف کامر س کی ایگزیکٹوکمیٹی کے آنے والے اجلاس میں اسپر مزید بحث کی جائے گی جو کے رواں سال اگست میں تہران میں ہوگا۔انہوں نے پاکستان اور تر کی کے درمیان با ہمی تجا ر ت کو فر و غ دینے کیلئے کہا کہ دونو ں ممالک سروس سیکٹر اور فیشریزکے سیکٹرپر بھی توجہ دیں۔پاکستان نے پہلے سے ہی اپنے کمر شل بینک کی بر ا نچیں تر کی میں کھو ل رکھی ہیں جس سے دونو ں ممالک کے پرائیویٹ سیکٹر کو فا ئدہ ہو رہا ہے ۔اور انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ ترکی کو بھی اپنے بینکوں کی بر ا نچیں پاکستان میں کھولنی چا ئیے۔

ترکی کے قونصل جنر ل مراد مصطفی اونارٹ نے کہا کہ پاکستان اور تر کی ای سی او کے بنیا دی ممبران ہیں ۔جو کہ دو دہائیاں قبل آر سی ڈی کی ایک توسیعی شکل ہے انہوں نے کہا کہ دونو ں ممالک ای سی او او ریجن میں تجا ر تی اور اقتصادی تر قی میں اہم کر دار ادا کر رہے ہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ ای سی او کے پلیٹ فارم پہ تر کی پاکستان کو سپور ٹ کرتاہے انہوں نے مزید کہا کہ ای سی او کے ذریعے علاقائی تجا ر تی میں ا ضافہ میں مدد مل رہی ہے۔اور اب قتصادی تعاون کی تنظیم (ای سی او ) ECOTA سے FTAکی جانب بڑرہا ہے۔جو کہ تجا ر تی معاملات کو مزید آگے بڑھا ئے گا۔

ترکی کے قونصل جنر ل نے مزید کہا کہ پاکستان اور ترکی D8کے ممبر ہیں اورD8کی چےئرمین شپ اگلے سال ترکی کو سونپ دی جائیگی اور انہوں نے اس بات کا یقین دلایا کہ ترکی D8فارم پہ پاکستا ن کو ہر معمالات میں سپورٹ کر تا رہے گا۔

مہر عالم خان
سیکریٹری جنرل